ترکی دنیا میں بڑھتے ہوئے ‘اسلاموفوبیا’ سے نبٹنے کے لیے ‘سوفٹ پاور’ کا استعمال کرے گا

0 250

 

ترک وزیر برائے ثقافت و سیاحت، نعمان قرتلموش نے کہا ہے کہ ترکی دنیا میں ابھرتے ہوئے اسلاموفوبیا اور ترک مخالف جذبات سے نبٹنے کے لیے اپنی ‘سوفٹ پاور’ کا استعمال کرے گا۔

ترک دارالحکومت انقرہ میں معروف عالمی خبر رساں ادارے انادولو ایجنسی کے ایڈیٹرز ڈیسک سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا: "دنیا بھر میں اسلامو فوبیا اور ترکی کے خلاف گہرے جذبات پائے جاتے ہیں۔ ترک سیاحت کو نقصان پہنچانے کے لیے ‘ترکی مت جاؤ’، ‘ترکی ایک خطرناک ملک ہے’ جیسے غلط تصورات پھیلائے جاتے ہیں”۔ انہوں نے مزید کہا: "ترکی اسلاموفوبیا اور ترکی مخالف جذبات کو زائل کرنے کے لیے اپنی ثقافت اور سیاحت کو بطور ‘سوفٹ پاور’ استعمال کرے گا”۔

قرتلموش نے کہا کہ ان برائیوں کو روکنے کے لیے ایک سنجیدہ عالمی مکالمے کی ضرورت ہے جبکہ خطے میں پراکسی جنگوں کا بھی خاتمہ بہت ضروری ہے۔ انہوں نے کہا، دہشتگرد کسی ملک کو فائدہ نہیں دیتا۔

امریکا کی طرف سے ویزوں کو معطلی کو انہوں نے عارضی قرار دیتے ہوئے کہا کہ درحقیقت فیتو رہنما فتح اللہ گولن اب بھی ترکی میں رہائش پذیر ہے اور ترکی کے لیے ایک مستقل اور بڑا مسئلہ ہے۔

تبصرے
Loading...