ترک دفاعی ادارے آسل سان نے 320 ملین ڈالرز کے نئے آرڈرز حاصل کر لیے

0 273

ترک دفاعی ادارے آسل سان نے پچھلے سال کا اختتام زبردست نتائج کے ساتھ کیا تھا، اور عالمی وبائی مرض کے پھیلنے کی وجہ سے پڑنے والے منفی اثرات کے باوجود 2020ء کے ابتدائی مہینوں میں مزید 320 ملین ڈالرز کے نئے آرڈرز حاصل کر لیے ہیں۔

کمپنی کے چیئرمین خلوق گورگن نے کہا ہے کہ کمپنی نے 2020ء کے ابتدائی تین ماہ میں بھی اپنی نمو میں کمی نہیں آنے دی۔ آسل سان 2019ء کی طرح 2020ء میں بھی مضبوط مالیاتی نتائج کے ساتھ اپنی پیداواری صلاحیت اور تحقیقی سرگرمیوں کو جاری رکھے گی۔

انہوں نے زور دیا کہ جدید کروناوائرس کی وباء عالمی سطح پر پیداوار اور سپلائی چَین کی کمزوری کو ظاہر کرتی ہے۔ آسل سان نے ممکنہ بحرانی حالات کو پیش نظر رکھتے ہوئے سپلائی سسٹم ڈیزائن کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ آج کی کامیابی صدر رجب طیب ایردوان کے قومیانے اور مقامیانے کی اُن کوششوں کا نتیجہ ہے، کہ جو 2000ء کی دہائی کے اوائل میں شروع ہوئیں۔

گورگن نے کہا کہ آسل سان کے 5,000 سے سپلائرز اب مقامی کمپنیاں ہیں اور آسل سان کی مصنوعات میں ان کمپنیوں کا حصہ اپنی بلند ترین سطح پر پہنچ چکا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ مشرقِ بعید کے ممالک سے محدود خریداری کا متبادل بھی جلد مقامی طور پر حاصل کر لیا جائے گی جس سے سپلائی چَین میں رکاوٹ کم سے کم ہو جائے گی۔ "ہماری پیداوار مستقبلِ قریب میں سپلائی کے حوالے سے ممکنہ مسائل سے متاثر نہیں ہوگی۔”

آسل سان جو ترکی کا سب سے بڑا دفاعی کانٹریکٹر ہے، دنیا کی 100 بڑی دفاعی کمپنیوں میں سے ایک ہے۔

تبصرے
Loading...