رواں سال ترکی میں کمپیوٹر گیمز کی مارکیٹ 1 ارب ڈالرز سے بھی بڑھ جائے گی

0 236

کروناوائرس کی وباء نے جہاں معیشت کے کئی شعبوں کو بری طرح متاثر کیا ہے، وہیں ای-اسپورٹس، وڈیو گیمز اور آرگنائزڈ وڈیو گیمز مقابلوں میں اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔ اندازہ ہے کہ 2020ء کا سال مکمل ہونے تک ترکی کی گیمنگ مارکیٹ 1 ارب ڈالرز یعنی 6.8 ارب ترک لیرا سے تجاوز کر جائے گی۔

COVID-19 کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے دنیا بھر میں جو عالمی اقدامات اٹھائے گئے ہیں ان میں کرفیو اور قرنطینہ بھی شامل ہیں، یہی وجہ ہے کہ دنیا بھر میں ڈجیٹل گیمنگ اور ای-اسپورٹس کی صنعت کو فروغ ملاہے۔ ایک رپورٹ کے مطابق اس دوران گیم ڈاؤنلوڈز اور ای-اسپورٹس ٹورنامنٹ میں 30 فیصد اضافہ دیکھنے کو ملا ہے۔ ترکی کی گیمنگ مارکیٹ 2019ء میں 800 ملین ڈالرز کی تھی جس میں اب تیزی سے اضافہ متوقع ہے۔

عالمی اسپورٹس انڈسٹری اس وقت 488 ارب ڈالرز کی مالیت رکھتی ہے جبکہ فلم انڈسٹری کی مارکیٹ ویلیو 136 ارب ڈالرز ہے اور موسیقی کی 19 ارب ڈالرز۔ لیکن عالمی گیمنگ انڈسٹری 138 ارب ڈالرز کے ساتھ موسیقی کے بعد فلمی صنعت کو بھی پیچھے چھوڑ چکی ہے۔

گیمز کے لیے سب سے بڑے ڈسٹری بیوشن نیٹ ورک اسٹیم پر کھلاڑیوں کی تعداد مارچ کے اوائل سے بڑھنا شروع ہو گئی تھی اور اُس مہینے کے وسط تک یہ تاریخ میں پہلی بار 20 ملین سے تجاوز کر گئی، جو ایک ریکارڈ ہے۔

گیمنگ میں دلچسپی بڑھنے کی وجہ سے کمپیوٹر اور ہارڈویئر کی فروخت میں بھی اضافہ دیکھنے کو ملا۔

تبصرے
Loading...