ترکی سے زیورات کی برآمدات جون میں تقریباً 217 ملین ڈالرز تک جا پہنچیں

0 438

جیولری ایکسپورٹرز ایسوسی ایشن (JTR) کے مطابق جون میں ترکی نے تقریباً 217 ملین ڈالرز کے زیورات برامد کیے۔

جاری کردہ بیان میں ایسوسی ایشن کا کہنا ہے کہ 2018ء کے اسی عرصے کے مقابلے میں گزشتہ ماہ برآمدات میں 9.52 فیصد اضافہ ہوا۔ مجموعی طور پر پہلی ششماہی میں غیر ملکی فروخت لگ بھگ 1.7 ارب ڈالرز تک جا پہنچی۔

یورپین یونین کے ممالک 97.6 ملین ڈالرز کے ساتھ ان برآمدات کو پانے میں سب سے آگے رہے جن کے بعد 41.7 ملین امریکی ڈالرز کے ساتھ دیگر یورپی ممالک رہے۔ مشرقِ قریب اور مشرقِ وسطیٰ کے ممالک 31.8 ملین ڈالرز، دیگر ایشیائی ممالک 18.8 ملین ڈالرز اور شمالی افریقہ کے ممالک 12.3 ملین ڈالرز کے ساتھ ان کے پیچھے رہے۔

ملکوں کی بنیاد پر دیکھیں تو برطانیہ 67.5 ملین ڈالرز کے ساتھ پیش پیش رہا کہ جہاں کے لیے زیورات کی برآمدات میں گزشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں اِس جون میں 2,812 فیصد اضافہ ہوا۔

سوئٹزرلینڈ 31.9 ملین ڈالرز کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہا، ہانگ کانگ 14.2 ملین ڈالرز، متحدہ عرب امارات 12.3 ملین ڈالرز، امریکا 9.6 ملین ڈالرز، جرمنی 8.6 ملین ڈالرز اور اسرائیل 8.5 ملین ڈالرز کے ساتھ اس سے پیچھے رہے۔

جون میں 216.7 ملین ڈالرز کی برآمدات کے ساتھ سب سے نمایاں مصنوعات خام یا نیم مکمل سونا تھا جس کا حصہ 49 فیصد اور 105.7 ملین ڈالرز رہا۔

سونے کے زیورات 42 فیصد حصے اور 90.2 فیصد کے ساتھ دوسرے نمبر پر رہے، جبکہ 3 فیصد شیئر اور 5.7 ملین ڈالرز کے ساتھ ہیرے-سونے کے زیورات دوسرے نمبر پر رہے۔ چاندی کے زیورات 2 فیصد شیئر اور 4.7 ملین ڈالرز اور فاضل اور ٹکڑوں پر مشتمل قیمتی دھاتیں 2 فیصد اور 4.4 ملین ڈالرز کے ساتھ ان سے پیچھے رہیں۔

دریں اثناء گزشتہ سال ترکی کی زیورات برآمدات 35 فیصد اضافے کے ساتھ 4.41 ارب ڈالرز تک پہنچی، جس میں 28 فیصد یا 1.23 ارب ڈالرز یورپی یونین کے ممالک سے آئے۔ ان کے بعد 25 فیصد شیئر (تقریباً 1.1 ارب ڈالرز) کے ساتھ دیگر یورپی ممالک اور 23 فیصد (1 ارب ڈالرز سے کچھ زیادہ) کے ساتھ مشرقِ قریب اور مشرقِ وسطیٰ کے ممالک رہے۔

تبصرے
Loading...