ترکی، بے روزگاری کی شرح گھٹ کر 11.2فیصد ہو گئی

0 364

ترکی میں بے روزگاری کی شرح پچھلے مہینے کے 11.4 فیصد سے گھٹ کر اکتوبر میں 11.2 فیصد ہو گئی ہے۔

تازہ ترین سرکاری اعداد و شمار کے مطابق ترکی میں بر سرِ روزگار افراد کی تعداد 1,80,000 نفوس کے اضافے کے ساتھ 2.96 کروڑ ہو گئی ہے، یوں روزگار کی شرح 0.2 فیصد اضافے کے ساتھ 46.2 فیصد تک پہنچ گئی ہے۔

دریں اثناء، بے روزگاری پر قابو پانے کے لیے وقتی طور پر اٹھائے گئے اقدامات سے کُل افرادی قوت 21.8 فیصد سے بڑھ کر 22.8 فیصد تک جا پہنچی ہے۔

کووِڈ-19 لاک ڈاؤن کے ابتدائی ایام کے دوران مئی 2020ء سے حالات کی سختی بڑھ گئی تھی لیکن رواں سال کے اوائل سے ان اقدامات کی بدولت صورت حال معمول پر آنا شروع ہوئی۔

ترک ادارۂ شماریات کے مطابق افرادی قوت شرح میں اکتوبر میں پچھلے کے مقابلے میں 0.1 فیصد اضافہ ہوا ہے، جو 52 فیصد ہو چکی ہے، ۔

اس کے علاوہ 15 سال کی عمر کے بے روزگار افراد کی تعداد میں 75,000 نفوس کی کمی آئی ہے، جو اب 37 لاکھ ہیں جبکہ 15 سے 24 سال کے نوجوانوں میں بے روزگاری کی شرح 20.1 فیصد رہی جو پچھلے مہینے کے مقابلے میں 0.8 فیصد کم ہوئی ہے۔

یاد رہے کہ جنوری سے یہ اعداد و شمار بین الاقوامی معیار کے مطابق نئے انداز میں پیش کیے جا رہے ہیں۔

تبصرے
Loading...
%d bloggers like this: