نگورنو-قاراباخ میں بارودی سرنگوں کے خاتمے میں ترکی آذربائیجان کی مدد کرے گا

0 190

ترک فوج آرمینیا کے قبضے سے آزاد کرائے گئے علاقوں سے بارودی سرنگوں کے خاتمے کے لیے آذربائیجان کی فوج کی مدد کرے گی۔

ترک وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ مسلح افواج آذربائیجانی دستوں کو عسکری تربیت فراہم کریں گی۔ جاری کردہ بیان میں وزارت نے کہا ہے کہ ترکی کی ٹیمیں آرمینیا سے آزاد کرائے گئے علاقوں سے بارودی سرنگوں اور IEDs کے خاتمے کے لیے آذربائیجان کی مدد کریں گی۔

ترک فوج چند علاقوں میں شہریوں کی واپسی میں سہولت دینے کے لیے لیبیا کی فوج کو بھی ایسی ہی مدد فراہم کر رہی ہیں۔ ترکی کے بارودی سرنگیں ختم کرنے والے ماہرین اور خصوصی دستے بارودی سرنگوں کے خاتمے اور حادثاتی دھماکوں سے بچنے کے لیے کام کر رہے ہیں تاکہ لیبیا میں باغی جرنیل خلیفہ حفتر سے چھڑائے گئے علاقوں میں حالات معمول پر لائے جا سکیں۔

سابق سوویت ریاستوں آذربائیجان اور آرمینیا کے مابین تعلقات 1991ء سے ہی کشیدہ ہیں کہ جب آرمینیا کی فوج نے آذربائیجان کے علاقے نگورنو-قاراباخ پر قبضہ کر لیا تھا۔ اس علاقے میں حالیہ کشیدگی 27 ستمبر کو شروع ہوئی تھی جب آرمینیا کی فوج نے آذربائیجان کے شہری علاقوں اور فوجی ٹھکانوں کو نشانہ بنایا اور انسانی بنیادوں پر کیے گئے سیز فائر کی بھی خلاف ورزیاں کیں۔ 44 دن کی لڑائی کے دوران آذربائیجان نے کئی شہر اور تقریباً 300 قصبات اور دیہات آرمینیا کے قبضے سے چھڑوائے۔ یہاں تک کہ 10 نومبر کو دونوں ملکوں نے لڑائی کے خاتمے اور ایک جامع حل کے لیے مذاکرات پر رضامندی ظاہر کی۔ اس معاہدے کو آذربائیجان کی فتح اور آرمینیا کی شکست سمجھا جا رہا ہے کہ جس کی مسلح افواج اب معاہدے کے تحت علاقے خالی کر رہی ہیں۔

تبصرے
Loading...