ترکی کی اسمارٹ ہائی وے جو انقرہ اور نغدہ کو ملائے گی

0 186

یہ ‏330 کلومیٹرز طویل شاہراہ جو دارالحکومت انقرہ اور وسطی صوبے نغدہ کو ملائے گی، اسے ملک کی اسمارٹ ترین ہائی وے قرار دیا جا رہا ہے۔

اس شاہراہ کا انتظام مقامی طور پر تیار کردہ ٹرانسپورٹیشن سسٹمز انفرا اسٹرکچر کے ساتھ ایک واحد کمانڈ سینٹر سے سنبھالا جائے گا۔ ٹیکنالوجی کے ساتھ ڈرائیورز کو شاہراہ پر ہونے ولاے حادثات اور دیگر خطرناک حالات سے فوراً آگاہ کیا جائے گا۔

انقرہ-نغدہ ہائی وے 330 کلومیٹرز طویل ہے جس میں 275 کلومیٹرز کی شاہراہ اور 55 کلومیٹرز کی اس تک رسائی رکھنے والی سڑکیں (access roads) ہیں۔

اسمارٹ ہائی وے دونوں صوبوں کے درمیان سفر کے دورانیے کو تقریباً آدھا کر دے گی، جو چار گھنٹے اور 14 منٹ سے کم ہوکر صرف دو گھنٹے اور 22 منٹ رہ جائے گا۔ ابتدائی طور پر 105 کلومیٹرز کا پہلا سیکشن اور 57 کلومیٹرز کا تیسرا سیکشن کھولے جائیں گے۔ منصوبہ انقرہ سے مرسین، ادانہ، غازی عنتب، حطائے اور شانلی عرفہ صوبوں کے درمیان رابطے قائم کرے گا اور یوں سالانہ فیول کی مد میں 12.551 ملین لیٹرز بچائے گا۔

اس منصوبے کے تحت سڑک کے نیچے 1.3 ملین میٹرز کی فائبر آپٹک کیبل بھی بچھائی گئی ہے۔ اس کے علاوہ شاہراہ کے ساتھ 500 ٹریفک سینسرز، 9 موسمیاتی آلات، حادثات کا سراغ لگانے والے 208 کیمرے، 335 اسمارٹ ٹرانسپورٹیشن فیلڈ مینجمنٹ یونٹس اور 687 ڈجیٹل میڈیا سرورز بھی لگائے گئے ہیں۔

2000ء کے اوائل سے نقل و حمل کے ڈھانچے کو بہتر بنانے کے لیے سرگرمِ عمل ترک حکومت مختلف شعبوں میں 767.5 ارب ترک لیرا (103.20 ارب امریکی ڈالرز) کی سرمایہ کاری کر چکی ہے۔

شاہراہ کی نگرانی 24 گھنٹے اور ساتوں دن ایک 15 رکنی کنٹرول ٹیم کے ذریعے کی جائے گی۔ یہ سسٹم حادثات، ٹریفک کا دباؤ بڑھنے یا دوسرے خطرناک حالات کی صورت میں متحرک ہوگا۔ ایک مرتبہ کیمروں کے ذریعے کسی واقعے کی اطلاع کنٹرول سینٹر میں ملنے کے بعد ڈرائیورز کو راستے پر موجود اسمارٹ سائنز کے ذریعے آگاہ کیا جائے گا۔

تبصرے
Loading...