وباء سے نمٹنے میں ترکی کی کامیابی نے ہمارے ملک میں دلچسپی مزید بڑھا دی ہے، صدر ایردوان

0 210

12 ویں ‏ICIEF سے بذریعہ وڈیو کانفرنس خطاب کرتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ "وباء سے نمٹنے میں ترکی کی کامیابی نے ہمارے ملک میں دلچسپی مزید بڑھا دی ہے۔ ہم، ان شاء اللہ، مستقبل میں موجود مواقع میں موجود دلچسپی کو بڑھا کر اس بحران سے نکلنے کا منصوبہ رکھتے ہیں۔”

صدر رجب طیب ایردوان نے اسلامی اقتصادیات و مالیات پر 12 ویں بین الاقوامی کانفرنس (ICIEF) سے خطاب کیا ۔

یہ کہتے ہوئے کہ COVID-19 وباء کے نتیجے میں دنیا ایک نئے دور میں داخل ہو چکی کہ جس میں بڑی تبدیلیاں واقع ہوں گی، صدر ایردوان نے زور دیا کہ ترکی ان نمایاں ملکوں میں سے ایک ہے کہ جنہوں نے کم سے کم نقصان اٹھاتے ہوئے اس وباء پر قابو پایا۔

"ترکی نے اپنے وسائل استعمال کیے”

ترکی کے صحت کے مضبوط ڈھانچے اور شہریوں کو فراہم کیے گئے جامع معاشی و سماجی امداد کے پیکیجز کی جانب توجہ دلاتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ بین الاقوامی انجمنوں کے بجائے ترکی نے اپنے وسائل کو استعمال کیا، اور کہا کہ ہم نے کریڈٹ ریٹنگ ایجنسیوں کی پیش گوئیوں پر یقین نہیں کیا کہ جو اپنا مقصد اور ساکھ تک کھو چکی ہیں۔ ہمیشہ کی طرح ہم ایک مرتبہ پھر تباہی کی خبریں دینے والوں کو باطل ثابت کریں گے۔ درحقیقت حالات کو معمول پر لانے کا منصوبہ نافذ ہوتے ہی پیداوار، تجارت اور سیاحت بحال ہو رہی ہے۔ ہم، ان شاء اللہ، مستقبل میں موجود مواقع میں موجود دلچسپی کو بڑھا کر اس بحران سے نکلنے کا منصوبہ رکھتے ہیں۔”

"ہم استنبول کو اسلامی مالیات اور اقتصادیات کا مرکز بنانا چاہتے ہیں”

اس موضوع کو بھی چھیڑتے ہوئے کہ جسے صدر "موجودہ عالمی اقتصادی ڈھانچہ” کہتے ہیں، رجب طیب ایردوان نے کہا کہ حد سے زیادہ سرمایہ کاری نے ایک پھولا ہوا معاشی ماڈل تخلیق کیا کہ جس میں سماجی و انسانی نقصان کو نظر انداز کیا گیا، اور پھر ایک اسلامی اقتصادیات اور مالیات کا ماڈل ہے جو موجودہ مسخ شدہ آرڈر کا متبادل ہے اور لوگوں پر توجہ رکھتا ہے۔ ترکی میں سود سے پاک نظام کی بہتری کے لیے بنائے گئے اداروں کی جانب اشارہ کرتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ "ہمارا ہدف براعظموں اور ثقافتوں کے سنگم پر واقع استنبول کو اسلامی مالیات و اقتصادیات کا مرکز بنانا ہے۔”

تبصرے
Loading...