ترکی کی جانب سے صومالیہ اور جبوتی میں رمضان امداد تقسیم

0 168

ترکش کوآپریشن اینڈ کوآرڈی نیشن ایجنسی (TIKA) صومالیہ میں کیمپوں میں زندگی گزارنے والے 500 خاندانوں کی مدد کر چکی ہے۔

TIKA نے اپنے 2020ء رمضان پروگرام کے تحت چاول، آٹے، پاستا، چینی اور تیل پر مبنی فوڈ پیکیج ان خاندانوں میں تقسیم کیے ہیں جو دارالحکومت مقدیشو میں اپنے گھر چھوڑ کر کیمپوں میں رہنے پر مجبور ہیں۔

TIKA کے اہلکاروں کے ساتھ ساتھ ضلعی گورنر عبد الرحمٰن احمد علی، نائب گورنر عبد الرحیم علی اور ریجنل کمانڈر علی احمد بھی اس موقع پر موجود تھے۔

امداد حاصل کرنے والے صومالی خاندانوں نے ترک عوام اور TIKA کا شکریہ ادا کیا۔

صومالیہ میں، جو جدید کروناوائرس کی وباء سے بڑے پیمانے پر متاثر ہے، زیادہ تر لوگ دیہاڑی دار ہیں۔ اس معاشی صورت حال میں وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے پابندیاں لگانا مشکل ہے۔

اتوار کو ملک میں کروناوائرس کے 57 مریضوں کا اضافہ ہوا جس کے ساتھ کل تعداد 1054 تک پہنچ گئی۔ صومالیہ میں کروناوائرس سے مرنے والے افراد کی تعداد 51 ہے جبکہ 118 لوگ صحت یاب بھی ہوئے ہیں۔

جبوتی میں امدادی سرگرمیاں

ایجنسی نے انجمن ہلالِ احمر جبوتی کو بھی کروناوائرس سے بچاؤ کے لیے حفاظتی آلات اور کٹس فراہم کی ہیں۔

ساز و سامان کی فراہمی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے TIKA پروگرام کوآرڈی نیٹر قتلوخان یوجیل نے کہا کہ ترکی اس مشکل گھڑی میں جبوتی کے شانہ بشانہ کھڑے رہنے کا عزم رکھتا ہے۔

یہ دنیا بھر میں جاری TIKA کے امدادی پروگرام کا حصہ ہے، جس کے حوالے سے یوجیل نے کہا کہ "انجمن ہلالِ احمر جبوتی COVID-19 کے خلاف جدوجہد میں تنہا نہیں ہے۔”

عبدابراہیم فرح، سربراہ انجمنِ ہلال احمر جبوتی، نے اس بحران کے دور میں امداد فراہم کرنے پر TIKA اور ترکی کا شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے کہا کہ "گزشتہ اپریل میں ہم نے ترکی سے کچھ امداد حاصل کی تھی۔ یہ دوسری امداد ہلالِ احمر کی ضروریات کو پوراکرنے میں مدد دے گی۔”

تبصرے
Loading...