ترکش ایئرلائنز نے ایران و عراق کے لیے پروازیں معطل کر دیں

0 361

ترکی کی قومی پرچم بردار ترکش ایئرلائنز (THY) نے عراق اور ایران کے لیے اپنی شیڈول پروازیں عارضی طور پر معطل کر دی ہیں۔

ایئرلائن کا کہنا ہے کہ ایران اور امریکا کے درمیان تناؤ کی وجہ سے وہ جمعرات کی رات 9 بجے مقامی وقت سے عراق و ایران کے لیے اپنی پروازیں معطل کر رہی ہے۔

مزید کہا گیا کہ ترکش ایئرلائنز ان دونوں ممالک کی فضائی حدود استعمال نہیں کرے گی۔

قبل ازیں بدھ کو ایران کے پاسدارانِ انقلاب نے عراق میں امریکی اور اتحادی افواج کے اڈوں پر درجن بھر میزائل داغے۔

ایران نے یہ قدم گزشتہ ہفتے امریکی ڈرون حملے میں سرفہرست ایرانی جرنیل قاسم سلیمانی کے قتل کے ردعمل میں اٹھایا۔

سنگاپور ایئرلائنز پہلے ہی ایرانی فضائی حدود سے اپنی پروازوں کا رخ دوسری جانب پھیر چکی ہے۔ امریکی فیڈرل ایوی ایشن ایڈمنسٹریشن نے بھی کہا ہے کہ وہ ہوائی اداروں کو عراق، ایران، خلیج اور خلیجِ عمان کے علاقوں پر پروازوں سے روکے گا۔

بدھ کو امریکی افواج پر ایران کے میزائل حملے کے کچھ دیر بعد ہی 176 مسافروں کو لے جانے والا یوکرین کا ایک ہوائی جہاز ٹیک آف کے دوران تہران میں گر کر تباہ ہو گیا، جس میں تمام افراد مارے گئے۔

ایرانی فوج نے ایسے کسی بھی تاثر کر مسترد کیا ہے کہ یہ جہاز کسی میزائل کا نشانہ بنایا اور ایرانی ہوا بازی اداروں کا کہنا ہے کہ انہیں کوئی میکانیکی مسئلہ لگتا ہے کہ جس کی وجہ سے یہ ساڑھے تین سال پرانا بوئنگ 737 تباہ ہو گیا۔ یوکرین کے حکام نے ابتداء میں اس کی تصدیق کی لیکن بعد ازاں حادثے کی وجہ واپس لے لی اور کہا کہ ابھی حادثے کی تحقیقات جاری ہیں۔

تبصرے
Loading...