ترکش ایئرلائنز نے نیو یارک کے لیے پروازیں معطل کر دیں

0 295

ترکش ایئرلائنز (THY) نے کروناوائرس کی عالمگیر وباء کے دوران نیو یارک کے لیے بھی اپنی پروازیں معطل کر دی ہیں۔ قومی پرچم بردار ایئرلائنز نے جمعے کو اعلان کیا کہ یہ فیصلہ ایک ہی دن میں امریکا میں کروناوائرس کے سب سے زیادہ کیس رپورٹ ہونے کے بعد کیا گیا ہے۔

THY کے چیف ایگزیکٹو آفیسر بلال اکشی نے کہا کہ "27 مارچ 2020ء کو رات 11 بجکر 59 منٹ سے 17 اپریل 2020ء تک صرف محدود بین الاقوامی پروازیں ہی چلیں گی۔ اسی طرح نیو یارک کی پروازیں بھی بند کر دی گئی ہیں۔”

یہ اعلان امریکا میں کروناوائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 82 ہزار سے بھی تجاوز کرنے کے بعد اٹھایا گیا ہے، جس کے ساتھ ہی امریکا چین اور اٹلی کو پیچھے چھوڑ چکا ہے۔ نیو یارک، نیو اورلینز اور دیگر اہم مقامات میں ہسپتالوں میں مریضوں کی آمد میں زبردست اضافہ ہوا ہے اور رسد، عملے اور بستروں کی کمی سر پر منڈلا رہی ہے۔

طبی تنصیبات میں وینٹی لیٹرز اور حفاظتی ماسک کی کمی اور تشخیص کے لیے محدود سہولیات کی وجہ سے امریکا میں COVID-19 سے ہونے والی اموات 1,200 کا ہندسہ عبور کر چکی ہیں۔

ترکش ایئرلائنز نے اتوار کو کہا تھا کہ وہ جمعہ 27 مارچ سے تمام بین الاقوامی پروازیں بند کر رہی ہے سوائے ہانگ کانگ، ماسکو، ایتھوپیا، نیو یارک اور واشنگٹن کے۔

خود ترکی میں گزشتہ روز مزید 16 اموات کے ساتھ کروناوائرس سے ہونے والی ہلاکتیں 75 تک پہنچ گئی ہیں۔ وزیر صحت فخر الدین کوجا نے بتایا کہ کُل مریضوں کی تعداد 1,196 مریضوں کے اضافے کے ساتھ 3,629 تک پہنچ چکی ہے۔

گزشتہ سال دسمبر میں چین کے شہر سے ووہان سے نکلنے والا یہ وائرس کہ جسے باضابطہ طور پر COVID-19 کا نام دیا گیا ہے، اب تک کم از کم 175 ممالک اور خطوں تک پھیل چکا ہے۔ جمعے کی دوپہر تک اس کے دنیا بھر میں 5,33,400 سے زیادہ مریض سامنے آ چکے ہیں جبکہ ہلاکتیں 24,000 سے زیادہ ہوئی ہیں۔ اب تک 1,22,000 مریض صحت یاب بھی ہو چکے ہیں۔

تبصرے
Loading...