وباء میں شادی، ترک دلہنیں 10 ہزار ڈالرز کے سونے کے ماسکس پہننے لگیں

0 237

کرونا وائرس کے اس عہد میں ترک دلہنوں کو پہننے کے لیے سونے کا ایک نیا "زیور” مل گیا ہے۔

ترک دلہنوں کو عموماً خاندان اور شریک مہمانوں کی جانب سے سونے کے زیورات اور دیگر طلائی چیزیں تحفتاً ملتی ہیں۔ لیکن کرونا وائرس کی وجہ سے ترکی میں شادیوں کے رسوم و رواج میں کچھ تبدیلیاں آ گئی ہیں – جن میں ماسک پہننا اور سماجی فاصلہ رکھنا بھی شامل ہیں۔

وہ کہتے ہیں ناں کہ ضرورت ایجاد کی ماں ہوتی ہے، اس لیے اس صورت حال نے دلہنوں کے لیے ایک نیا اور خوبصورت زیور بھی ایجاد کر لیا ہے۔

جنوب مشرقی ترک صوبہ قہرمان مراش میں ایک کاریگر نے دلہنوں کے لیے 14 اور 22 قیراط سونے کے ماسکس بنانا شروع کر دیے ہیں۔ یہ زرق برق ماسکس COVID-19 سے بچاؤ میں مدد تو دیتے ہی ہیں، لیکن فیشن کے تقاضوں بھی پورے کر رہے ہیں۔

ان ماسکس کی قیمت 8 ہزار ترک لیرا (1150 ڈالرز) سے شروع ہوتے ہوئے 75 ہزار لیرا تک جاتی ہے۔

ماسک بنانے کے لیے پہلے دلہن کے چہرے کا ناپ لیا جاتا ہے اور پھر تین دن کے اندر ماسک تیار کر دیا جاتا ہے۔

یہ ماسک مختلف اسٹائل میں بنائے جا رہے ہیں اور ایک انوکھے زیور کی حیثیت سے پہنے جا رہے ہیں۔

قہرمان مراش کی چیمبرز آف جوئیلرز کے چیئرمین مصطفیٰ اوز نے کہا کہ ایسے ماسکس کی طلب بڑھتی جا رہی ہے۔ "امید ہے کہ تمام شادیوں میں دلہنوں کے چہرے پر ایسے ہی سنہری ماسک نظر آئیں گے۔”

تبصرے
Loading...