ترک دفاعی ادارہ آسل سان پاکستان اور یوکرین میں اپنے دفاتر کھولے گا

0 171

ترکی کا عظیم دفاعی ادارہ آسل سان (ASELSAN) یکم جنوری سے پاکستان اور یوکرین میں اپنے دفاتر کھولے گا۔

آسل سان اِس وقت اپنی مصنوعات 65 ممالک کو فروخت کر رہا ہے اور کمپنی کا ہدف یوکرین اور پاکستان کے ساتھ اپنے دفاعی سودوں کو مزید بڑھانا ہے۔ یوکرین نے ترک دفاعی مصنوعات میں کافی دلچسپی دکھائی ہے جبکہ پاکستان کو پچھلے سال ایک نیوی فلیٹ ٹینکر دیا گیا ہے جو سب سے بڑی واحد دفاعی برآمد ہے۔

کمپنی آذربائیجان، فلپائنز، قطر، اردن، قزاقستان، سعودی عرب، ملائیشیا، جنوبی افریقہ، متحدہ عرب امارات اور شمالی مقدونیہ میں دفاتر رکھتی ہے۔ ان ممالک میں لوکلائزیشن کا عمل اس کی برآمدی صلاحیتوں کو بڑھاتا ہے۔ یہ دفاتر ترک جنرل مینیجر کی جانب سے چلائے جاتے ہیں اور ان میں مقامی عملہ بھرتی کیا جاتا ہے۔

آسل سان، جس کی آمدنی 2018ء میں 1.87 ارب ڈالرز تک پہنچی تھی، 2019ء کا اختتام متوقع طور پر 2.9 ارب ڈالرز کے ریونیو کے ساتھ کرے گا۔

آسل سان عسکری اور شہری ٹیلی مواصلات، ریڈار، الیکٹرانک وارفیئر، دفاع، ہتھیار، کمانڈ کنٹرول اور نیوی گیشن سسٹم میں کام کرتا ہے۔

ڈیفنس نیوز ٹاپ 100 لسٹ 100 کے مطابق آسل سان گزشتہ سال 1.8 ارب ڈالرز کی دفاعی آمدنی کے ساتھ فہرست میں 52 ویں نمبر پر ہے۔ سوئیڈن میں قائم اسٹاک ہوم انٹرنیشنل پیس ریسرچ انسٹیٹیوٹ (SIPRI) کی جاری کردہ رپورٹ نے ظاہر کیا کہ آسل سان 100 سب سے بڑی دفاعی کمپنیوں میں 54 ویں نمبر پر ہے۔

تبصرے
Loading...