ترک وزیر خارجہ نے غیر رجسٹرڈ شامی مہاجرین بارے فیصلہ سنا دیا

0 2,935

ترک وزیر خارجہ سلیمان سویلو نے کہا ہے کہ ترکی غیر رجسٹرڈ شامی مہاجرین کو اپنی حدود سے باہر نہیں نکالے گا لیکن ہم اس ضمن میں ضرور کام کریں گے کہ شامی مہاجرین کی قانونی صورتحال، ترک عوام کے ساتھ تعلقات  اور سرگرمیوں پر اپنی جانچ پڑتال مضبوط کریں۔ انہوں نے یہ بات ترک ٹیلی ویژن پر ایک انٹرویو میں کہی۔

انہوں نے بتایا کہ اس وقت ترکی میں ایک ملین اور 23 ہزار شامی مہاجرین رجسٹرڈ ہو چکے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ترکی نے شامی مہاجرین پر انسانیت، مہاجرت اور امداد بارے مثبت قدم اٹھائے ہیں۔ انہوں نے واضع کیا کہ استنبول میں مزید کوئی شامی مہاجر رجسٹر نہیں کیا جائے گا الا کہ کوئی بڑا مسئلہ درپیش ہو۔

انہوں نے کہا کہ شامی مہاجرین کے دوسرے ملکوں کے شہریوں کے ساتھ مسائل موجود ہیں اور یہ مسئلہ پورے ترکی میں ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس کے باوجود کسی غیر رجسٹرڈ شامی مہاجر کو واپس نہیں بھیجا جا رہا بلکہ انہیں خصوصی کیمپس میں رکھا جائے گا۔

انہوں نے یہ بھی بتایا کہ اگر کوئی مہاجرین خود سے واپس شام جانا چاہتا ہے تو اس کے لیے شمالی سرحد کا دروازہ کھلا ہے لیکن کسی کو زبردستی ترکی سے بے دخل نہیں کیا جائے گا۔

ترکی اس وقت مہاجرین کو سنبھالنے والا دنیا کا سب سے بڑا ملک ہے۔ ملک میں 5 ملین سے زائد مہاجرین رہائش پذیر ہیں جن میں2019ء تک  3.9 شامی مہاجرین تھے۔ ترکی شامی بحران کے بعد اب تک مہاجرین پر 30 ملین ڈالر کی بڑی رقم خرچ کر چکا ہے جو اس کی معیشت پر بھی اثر انداز ہوئی ہے۔

تبصرے
Loading...