ڈالر کے مقابلے میں لیرا کے اتار چڑھاؤ کو کنٹرول کرنے کے لیے ایکشن پلان لا رہے ہیں، ترک وزیرِ معیشت

0 1,560

ترکی کی کرنسی "ترکش لیرا” امریکی ڈونلڈ ٹرمپ کے ذاتی حملے میں نشانہ بنائی گئی تھی اور ترکی نے ڈالر کے مقابلے میں اس کے اتار چڑھاؤ کو کنٹرول کرنے لیے ایکشن پلان ترتیب دے دیا ہے۔ یہ بات اتوار کے روز ترک وزیر معیشت و خزانہ بیرات البیراک نے بتائی۔

انہوں نے کہا، "اگر حالات کی ضرورت ہوئی تو ہمیں ضروری مالی قانون لاگو کریں گے”۔

اتوار کے روز ہی ترک صدر رجب طیب ایردوان نے کہا کہ ترکش لیرا کی قدر میں اتار چڑھاؤ ترکی کے خلاف ایک سوچا سمجھا منصوبہ ہے لیکن ترک عوام اسے کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔

امریکی صدر کی طرف سے سٹیل اور ایلومینیم کی قیمتوں میں دو گنا اضافے کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ترکی ورلڈ ٹریڈ آرگنائزیشن کا ممبر ہے اور ڈبلیو ٹی او قوانین میں ایسی کوئی چیز موجود نہیں ہے۔

اس سے قبل ترک صدر نے کہا تھا کہ ہم چین، روس، ایران اور یوکرائن سے مقامی کرنسیوں میں تجارت کرنے کی تیاری مکمل کر چکے ہیں، جو ہماری تجارت کا سب سے بڑا حصہ ہے- ہم یہی نظام یورپی ممالک کے ساتھ بھی قائم کر سکتے ہیں اگر وہ ڈالر کے چنگل سے آزاد ہونا چاہتے ہوں۔

انہوں نے کہا کہ سود کی شرح کو کم سے کم رکھنا ہو گا کیونکہ یہ "استحصالی آلہ” ہے جو غریب کو غریب تر اور امیر کو امیر تر بناتا ہے”۔

تبصرے
Loading...