ارطغرل جیسے ڈراموں سے ترکی میں سیاحت کو فروغ ملے گا، نیٹ فلکس

0 121

نیٹ فلکس نے کہا ہے کہ ترک ٹیلی وژن سیریز دیکھنے والے افراد میں ترکی جانے کی خواہش نہ دیکھنے والے افراد سے دوگنی ہے۔

یہ تحقیق استانبول اکنامک ریسرچ نے آٹھ مختلف ملکوں میں کی کہ جن میں امریکا، بھارت، آسٹریلیا، برازیل، فرانس، سوئیڈن، ارجنٹینا اور سعودی عرب شامل تھے۔

سروے میں شامل افراد کو دو حصوں میں تقسیم کیا گیا، ایک ترک ٹیلی وژن سیریز دیکھنے والے اور دوسرے نہ دیکھنے والے۔ دونوں گروپوں سے پوچھا گیا تھا کہ وہ وبائی صورت حال ختم ہونے کے بعد کیا سیاحت کے لیے ترکی جائیں گے؟ پہلے گروپ کے 54 فیصد افراد نے اثبات میں جواب دیا جبکہ دوسرے گروپ میں "ہاں” کہنے والوں کی شرح صرف 25 فیصد رہی۔

آسٹریلیا، امریکا، سعودی عرب اور بھارت میں ترک ٹی وی سیریز دیکھنے والوں میں ترکی کی سیاحت کی خواہش زیادہ نظر آئی۔

ترکی میں سیاحت کے لیے 2019ء ایک شاندار سال رہا، جس میں آنے والے مہمانوں اور سیاحت سے حاصل ہونے والی آمدنی دونوں بہت زیادہ تھیں۔ پچھلے سال ترکی نے 51.9 ملین سیاحوں کا خیر مقدم کیا، جو گزشتہ سے پیوستہ سال کے مقابلے میں 13.7 فیصد زیادہ تھا۔ ان میں سے 86.2 فیصد غیر ملکی اور 13.8 فیصد ترک شہری تھے جو بیرونِ ملک مقیم ہیں۔ ترک ادارۂ شماریات کے مطابق پچھلے سال سیاحت کی آمدنی 34.5 ارب ڈالرز تک جا پہنچی تھی، جو کہ ایک ریکارڈ ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان میں ‘دریلش: ارطغرل’ کی شاندار کامیابی کے بعد کئی ٹؤر آپریٹرز ایسے پیکیج پیش کر رہے ہیں جن میں ارطغرل کے مزار کی زیارت بھی شامل ہے۔

تبصرے
Loading...