مُرسی کی وفات کے پیچھے متحدہ عرب امارات ہو سکتا ہے، سابق فرانسیسی انٹیلی جنس چیف

0 2,575

فرانس کی انٹیلی جنس ایجنسی کے سابق سربراہ نے ایک ٹوئٹ میں دعویٰ کیا ہے کہ طحنون بن زید النہیان، متحدہ عرب امارات کے ولی عہد کے بھائی اور قومی سلامتی مشیر، کا مصر کے پہلے اور واحد جمہوری طور پر منتخب ہونے والے صدر محمد مُرسی کی مشتبہ وفات سے تعلق ہو سکتا ہے۔

برنارڈ بایولے، سابق سربراہ فرانسیسی خفیہ سروس ڈائریکٹوریٹ-جنرل فار ایکسٹرنل سکیورٹی (DGSE) نے کہا کہ 16 جون کو طحنون بن زاید کا دورۂ قاہرہ مُرسی کی وفات سے جوڑا جا سکتا ہے۔

مرسی سوموار کو عدالتی کارروائی کے دوران مبینہ طور پر دل کے دورے سے جاں بحق ہوئے۔ ملک کے ریاستی ٹیلی وژن نے منگل کو علی الصبح بتایا کہ مرسی "رسولی کا شکار تھے، ان کی مسلسل طبی نگرانی کی جا رہی تھی اور ان کی موت کا سبب دل کا دورہ تھا۔” انہیں منگل کو علی الصبح قاہرہ کے مشرق میں نصر شہر میں دفن کیا گیا۔

اخوان المسلمون نے مصری حکام کو مرسی کی "آہستہ آہستہ اور جان بوجھ کیا گیا قتل” قرار دیا ہے۔

صدر رجب طیب ایردوان نے بدھ کو کہا تھا کہ وہ مرسی کی موت کو طبعی نہیں سمجھتے ہیں اور ترکی اس معاملے کی پیروی کرے گا۔ "محمد مرسی عدالت کے فرش پر 20 منٹ تک پڑے رہے، لیکن حکام نے مداخلت نہیں کی۔ اس لیے میں کہہ رہا ہے کہ مرسی کی موت طبعی نہیں تھی، بلکہ انہیں قتل کیا گیا۔” ایردوان نے کہا۔ "ہم اس کی پیروی کریں گے اور مصر کو بین الاقوامی عدالتوں میں گھسیٹنے کے لیے ہر ممکن قدم اٹھائیں گے،” انہوں نے مزید کہا۔

ایمنسٹی انٹرنیشنل اور انسانی حقوق کے دیگر اداروں نے مرسی کی وفات کی آزادانہ، شفاف اور جامع تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے اور قید میں ان کے ساتھ روا رکھے گئے سلوک پر سوالات اٹھائے ہیں۔ مصر کی حکومت نے ان الزامات کو مسترد کیا ہے کہ مرسی کے ساتھ خراب برتاؤ کیا گیا۔

ایک فرانسیسی قانون ساز اور دانشور گیلے دیویر کہ جو بین الاقوامی عدالتِ انصاف میں فلسطینی اتھارٹی کی نمائندگی کر چکے ہیں، کہا کہ وہ اقوام متحدہ اور بین الاقوامی فوجداری عدالت (ICC) میں مصر کے پہلے جمہوری طور پر منتخب ہونے والے صدر محمد مرسی کی وفات کی تحقیقات کے لیے درخواست دے چکے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ "مرسی کو قید میں چھ سال کے دوران مناسب طبی علاج فراہم نہیں کیا گیا اور ان کی موت طبعی نہیں تھی۔ صحت کے وہ مسائل جو مرسی کی موت کا سبب بن سکتے تھے ان سے اچانک موت واقع نہیں ہوتی۔” انہوں نے کہا کہ مصر کو مرسی کی صحت کے ریکارڈز کی معلومات لازماً دینا ہوگی۔

تبصرے
Loading...