سوموار کے روز بیت المقدس بارے امریکی فیصلہ کو رد کرنے کے لیے سلامتی کونسل میں ووٹنگ ہو گی

0 179

سوموار کے روز اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی جانب سے بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت قرار دئیے جانے کے خلاف قرار داد پر ووٹنگ کی جائے گی۔

اقوام متحدہ کی قرار داد کے ڈرافٹ میں لکھا گیا ہے "اس بات کی توثیق کی جاتی ہے کہ کوئی فیصلہ یا عمل جو پاک مقام بیت المقدس کے کردار، حیثیت یا جغرافیائی مقام کو بدلنے کی کوشش کرے اس کی کوئی قانی حیثیت نہیں ہو گی اور کالعدم قرار دیا جائے گا۔ اور سیکیورٹی کونسل کی متعلقہ قرار دادوں سے متضاد ہونے کی وجہ سے منسوخ کر دیا جائے گا”۔

قرار داد یہ بھی مطالبہ بھی کرتی ہے کہ تمام ریاستیں سیکیورٹی کونسل کی قرار دادوں پر عملدرآمد کو یقینی بنائیں اور کسی ایسے عمل یا قدم کو تسلیم نہ کریں جو ان قرار دادوں سے متضاد ہو۔

اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے موجود پانچ مستقل ممبران چین، فرانس، روس، برطانیہ اور امریکا کے علاوہ دس غیر مستقل ممبران بولیویا، مصر، ایتھوپیا، اٹلی، جاپان، کاغیزستان، سینگال، سویڈن، یوکرائن اور اوروگائے شامل ہیں جو اس قرار داد پر ووٹ کریں گے۔

 

تبصرے
Loading...