ڈرائی فروٹ کے مشغلے نے اسے بڑی ایکسپورٹ بزنس وومن بنا دیا

ترک خاتون مروہ انیل، اوشک شہر میں ڈرائی فروٹ کا بزنس کر رہی ہیں

0 1,265

ترکی کے ایجین صوبے اوشک سے تعلق رکھنے والی کاروباری خاتون مروہ انیل، جو ایک دن اپنے گھر کے لیے میوے خشک کرنے والے دو اوون لاتے ہوئے خشک میوہ جات کے شعبے میں داخل ہوئی تھیں، انہوں نے گزشتہ سال اپریل میں اس کام کے لیے ایک ورکشاپ کھولی اور اپنی پیداواری صلاحیت میں اضافہ کیا۔ آج وہ اپنی مصنوعات کامیابی کے ساتھ برآمد کر رہی ہیں۔

مروہ انیل نے ابتدائی طور پر ضلع باناز میں اپنے گھر پر میوہ جات کو خشک کرنا شروع کیا تاکہ گلنے سڑنے کی وجہ سے پیدا ہونے والے فضلے کو کم کیا جا سکے، اس کے علاوہ انہوں نے اپنی محدود پیمانے پر خشک کیے گئے میوہ جات کو سوشل میڈیا پر فروخت کرنا شروع کر دیا۔ انہوں نے گزشتہ سال اپریل میں کولڈ اسٹوریج یونٹ سے لیس ایک ورکشاپ قائم کی جس میں عالمی معیارات کے مطابق خشک میوہ جات کو پروڈکٹ کی شکل دی جاتی ہے۔

اپنی مصنوعات کی لسٹ میں سبزیوں کے ساتھ رنگین نوڈلز اور پاستا شامل کرتے ہوئے، مروہ نے برطانیہ، آسٹریا، جرمنی، ریاستہائے متحدہ اور فرانس کو مصنوعات برآمد کرنا شروع کر دیں۔

مروہ کی کامیابی نے ترکی کی زرعی برآمدات کو ہمہ وقتی بلندیوں پر پہنچایا ہے۔

امروہ نے بتایا کہ خشک میوہ جات کی مانگ کافی زیادہ ہے، اور جو لوگ صحت مند کھانے کی عادات کو اپنانا چاہتے ہیں وہ تیزی سے خشک میوہ جات اور اس سے ملتی جلتی مصنوعات کی طرف متوجہ ہو رہے ہیں۔

مروہ نے بتایا کہ کس طرح اس نے اپنی مصنوعات بیرون ملک بھیجنا شروع کیں۔ اس نے کہا، "اس سال میرے لیے سب سے خوشی کی بات یہ ہے کہ میری مصنوعات کی بیرون ملک بھی مانگ ہے۔”

اس نے فخر سے کہا کہ "میں نے سب سے پہلے اس راستے پر چلنا اس وقت شروع کیا کیونکہ ہمارے گھر اور گرد و نواح میں فضلے اکٹھا ہو رہا تھا، اور آج میری بہت ساری مصنوعات ممالک کو بھیجی جاتی ہیں۔ مجھے بہت زیادہ پروڈکٹس کو پروسیس کرنے کا اعزاز حاصل ہے”۔

مرہ نے کہا کہ اس کا سب سے بڑا مقصد اپنی برآمدات کو بڑھانا ہے۔ انہوں نے مزید کہا، "ایک کاروباری خاتون ہونے کے ناطے، میں بہت خوش ہوں کہ ہماری مصنوعات پوری دنیا میں بھیجی جاتی ہیں۔”

اس کی خواہش ہے کہ وہ اپنی مصنوعات کو پوری دنیا میں متعارف کرائیں۔

ان کا کاروبار ترکی کے 81 صوبوں تک پھیل چکا ہے۔ قدرتی مصنوعات کی مانگ روز بروز بڑھ رہی ہے۔ ماہرین صحت اس سلسلے میں ان کی مصنوعات تجویز کرتے ہیں۔ اس وجہ سے وہ ان لوگوں کے لیے ایک منفرد برانڈ بن گئے ہیں جو قدرتی مصنوعات کو ترجیح دیتے ہیں۔ انہوں نے سبزیوں کے ساتھ ساتھ خشک میوہ جات کو بھی خشک کرنا شروع کر دیا ہے۔ ہم سبزیوں کے پاؤڈر بھی تیار کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایک وقت آئے گا جب پوری دنیا میں ان کی مصنوعات ترجیحاً خریدی جائیں گی۔

ترکی نے خواتین سائنسدانوں اور انجینئر کی شرح میں یورپ کو مات دے دی، یورپی ادارہ شماریات

تبصرے
Loading...
%d bloggers like this: