امریکہ، افغانستان سے اپنے انخلاء کا منصوبہ ترک نہیں کرے گا، رپورٹ

0 1,033

طالبان اگرچہ افغانستان کے کئی صوبوں پر اپنے قبضے کی تکمیل کر رہے ہیں تاہم امریکہ صدر جوبائیڈن نے کہا ہے کہ امریکہ  افغانستان سے اپنے انخلاء کا منصوبہ ترک نہیں کرے گا۔ نیو یارک ٹائمز کی رپورٹ کے مطابق "بائیڈن امریکی انخلاء کا منصوبہ تبدیل نہیں کر رہے ہیں”۔ حکام کے حوالے سے کہا گیا ہے کہ ایک نامعلوم اعلیٰ افسر کے مطابق افغانستان منصوبہ پر نظرثانی کا کوئی منصوبہ زیر غور نہیں ہے۔

پینٹاگون میں جہاں ہچکچاہٹ کے ساتھ افغانستان سے تمام عسکری تعاون کو ختم کر دیا ہے، حکام اتوار کو فون کال کرتے ہوئے قندوز میں ہونے والی پیش رفت پر بات کرتے نظر آئے کہ امریکہ نے اس سے قبل دو بار قندوز کو طالبان کے ہاتھ جانے سے روکا ہے۔

Fighters with Afghanistan’s Taliban militia stand with their weapons in Ahmad Aba district on the outskirts of Gardez, the capital of Paktia province, on July 18, 2017. – Civilian deaths in Afghanistan hit a new high in the first half of 2017 with 1,662 killed and more than 3,500 injured, the United Nations said July 17. The majority of the victims were killed by anti-government forces — including the Taliban and in attacks claimed by the Islamic State, the report said. (Photo by FARIDULLAH AHMADZAI / AFP)

اخبار کے مطابق، "تاہم دفاعی عہدیداروں نے کہا کہ جیسا کہ امریکہ نے گذشتہ تین ہفتوں میں طالبان کی پیش رفت پر دکھایا ہے کہ محدود فضائی حملوں سے زیادہ کسی کاروائی کا کوئی منصوبہ نہیں ہے”۔ ایک عہدیدار نے اعتراف کیا ہے کہ افغانستان میں 650 امریکی فوجیوں کی موجودگی کے ساتھ محض فضائی مدد سے طالبان کا راستہ روکنے کا امکان نہیں ہے۔

طالبان اور افغان فوج کے درمیان بیرونی فوجوں کے انخلاء کے بعد درمیان جنگی چھڑپیں جاری ہے جو کہ 11 ستمبر کے بعد زیادہ شدت اختیار کر جانے کا خدشہ ہے۔ طالبان چھوٹے شہروں کو حاصل کرنے کے بعد اب صوبائی مرکزی مقامات پر قبضہ کر رہے ہیں۔

 

تبصرے
Loading...