وینزیلا، لاطینی امریکا میں قابل قدر پارٹنر ہے، رجب طیب ایردوان

0 163

ترک صدارتی کمپلیکس میں وینزیلین ہم منصب نیکولس میڈورا کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے ترک صدر رجب طیب ایردوان نے کہا: "خطے پر ترکی کی خارجہ پالیسی کے پیرامیٹرز واضح ہیں- ہم چاہتے ہیں کہ ہمارے تمام لاطینی دوست امن اور چین کی زندگی گزاریں۔ ہم وینزیلا سے دو طرفہ جیت کی بنیاد پر تعلقات کو آگے بڑھانا چاہتے ہیں”۔

انہوں نے کہا: "میں صدر میڈورا کی میزبانی کرتے ہوئے خوشی کا اظہار کرتا ہوں جو وینزیلا سے ترکی کا پہلا صدارتی دورہ کر رہے ہیں”۔

ترک ائیرلائنز وینزیلا کی طرف جانے والی پروازوں کو نہیں روکا

پریس کانفرنس سے قبل ہونے پر دو طرفہ معاہدوں پر بات کرتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا: "ہم اکنامک کوآپریشن معاہدہ سے خصوصی توقع رکھتے ہیں کیونکہ یہ وہ معاہدہ ہے جو مشترکہ اکنامک کمیشن کے قیام کا میکانزم بنائے گا”۔

انہوں نے کہا: "ہم نے توانائی اور تجارت میں تعاون کو فروغ دینے کے لئے اقدامات پر بات چیت کی ہے۔ ہم نے زراعت، کان کنی، سیاحت، نقل و حمل اور ترقی کے تعاون میں مزید کیا کچھ کیا جا سکتا ہےاس پر تبادلہ خیال کیا ہے”۔

صدر ایردوان نے کہا کہ ترک ائیرلائنز وینزیلا کی عوام کو اکیلا نہیں چھوڑے گی اور اپنی پروازوں کو بند نہیں کرے گی جس طرح دیگر کئی ہوائی کمپنیوں نے وینزیلا کی طرف دو طرفہ پروازیں بند کی ہیں۔

کراکس میں یونس امرے ثقافتی مرکز کھولا جائے گا

صدر ایردوان نے کہا: "ہم کراکس میں یونس امرے ترک ثقافتی مرکز کھولنے پر متفق ہیں۔ہم اس سے بھی خوشی ہوتی ہے کہ جلد انقرہ یونیورسٹی میں شمعون بولیوار سینٹر بنایا جائے گا”۔

ترک صدر نے سابق وینزیلین وزیر خارجہ کی طرف سے کراکس میں مسجد بنانے کی درخواست کو یاد کرتے ہوئے کہا کہ ہم نے اس درخواست پر ملاقات میں بات کی ہے کہ ہمیں اس کے لیے زمین مہیا کی جائے۔ ترک ایک خوبصورتی روایتی فن تعمیر سے مزین شاہکار مسجد تعمیر کرے گا۔

 

تبصرے
Loading...