ایردوان، مہاتیر، عمران ملاقات میں چینل کے قیام کا سابقہ فیصلہ: ملائیشیا اور ترکی نے منصوبہ پر دستخط کر دئیے

0 2,740

ملائیشیا اور ترکی نے اسلاموفوبیا کے خلاف جنگ سے متعلق مواصلاتی منصوبے کے لیے پہلی مفاہمتی یادداشت پر دستخط کر دئیے ہیں۔ کوالالامپور سمٹ میں ہونے والے ان دستخطوں کے وقت ترک صدر ایردوان اور ملائیشین سربراہ مملکت مہاتیر محمد بھی موجود تھے۔

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس کے بعد ترک صدر رجب طیب ایردوان، ملائیشین وزیراعظم ڈاکٹر مہاتیر محمد اور وزیراعظم پاکستان عمران خان کے درمیان اسلاموفوبیا کے تدارک کے لیے مواصلاتی ذرائع کے استعمال اور ٹی وی چینل کے قیام کا فیصلہ کیا گیا تھا۔

اس منصوبے کے متعلق وزیراعظم پاکستان نے اپنے ٹویٹر ہینڈل سے بتایا تھا کہ صدر ایردوان اور وزیر اعظم مہاتیر  کے ساتھ میری ملاقات میں تین ممالک کی حیثیت سے ہم نے اسلامو فوبیا کے خلاف جدوجہد  اور اپنے عظیم دین اسلام کے بارے میں غلط فہمیوں کے ازالے کے لئے ایک مشترکہ انگریزی ٹیلی ویژن چینل کے قیام کا فیصلہ کیا ہے۔

کوالالامپور میں ہونے والی سمٹ میں تاہم وزیراعظم پاکستان عمران خان نے شرکت سے آخری دنوں میں انکار کر دیا تھا۔ اس فیصلے کے متعلق انہوں نے ڈاکٹر مہاتیر محمد سے ٹیلی فونک رابطہ بھی کیا تھا جس کے بعد مہاتیر محمد نے کہا تھا کہ سعودی عرب کے تحفظات کو دور کیا جائے گا اور یہ سمٹ او آئی سی کا متبادل اتحاد قائم نہیں کرنے جا رہی ہے۔

ترک صدر ایردوان نےجینیوا میں وزیر اعظم پاکستان عمران خان سے ایک گھنٹہ 40 منٹ ملاقات کی تھی اور اس خواہش کا اظہار کیا تھا کہ اچھا ہوتا کہ عمران خان سہہ فریقی اجلاس کے بعد ہونے والے فیصلے کے مطابق اس سمٹ میں شرکت کرتے۔

پاکستان کی عدم شرکت کے باوجود ترکی اور ملائیشیا نے اسلاموفوبیا کے خلاف جنگ سے متعلق مواصلاتی منصوبے پر آگے بڑھتے ہوئے مفاہمتی یادداشت پر دستخط ک دئیے ہیں۔

تبصرے
Loading...