ہم مشکل دور سے گزر رہے ہیں، ایردوان کا رملہ میں ہونے والی کانفرنس میں تحریری پیغام

0 1,064

ترک صدر رجب طیب ایروان نے کہا ہے کہ امریکی انتظامیہ کی طرف سے بیت المقدس کو اسرائیلی دارالحکومت بنانے کے فیصلے نے مسلمانوں اور عیسائیوں میں غصے کی لہر پیدا کی ہے۔

 

رملہ میں ہونے والی کانفرنس "بیت المقدس مرکز نوجواناں 2018ء” کے موقع پر ایردوان کا پیغام، ترک وزیر برائے نوجواناں اور کھیل نے پڑھ کر سنایا۔ یہ پروگرام بیت المقدس کے مقدس شہر سے منسلک امن، استحکام اور بقائے باہمی کے صدیوں سے چلے آنے والے اصولوں کو اجاگر کرنا ہے جو اب یکطرفہ طور پر اسرائیلی نشانے پر ہیں اور عالمی قوانین کی خلاف کی جا رہی ہے۔

ترک صدر نے اس کانفرنس کے ذریعے بیت المقدس کو اسلامی مرکز کے طور پر مشتہر کروانے اور اس کے لیے اسلامی تعاون تنظیم کو ساتھ ملانے کو "درست قدم” قرار دیتے ہوئے تعریف کی۔

اپنے پیغام کے آخر میں انہوں نے فلسطینی صدر محمود عباس، فلسطینی عوام اور بیت المقدس کے نوجوانوں اور دوستوں کو آداب و تسلیمات پیش کی۔

اسلامک کانفرنس یوتھ فورم فار ڈائیلاگ اینڈ کواپریشن (او آئی سی کا ذیلی ادارہ) کے زیر اہتمام ہونے والے کانفرنس میں 30 ممالک کے وفود نے شرکت کی۔ پاکستانی وفد کی قیادت وزیر کھیل جہانگیر خانزادہ نے کی جبکہ وفد میں پنجاب حکومت کے مشیر اطلاعات ابوبکر عمر اور سیکرٹری سپورٹس اتھارٹی عمر جان شامل تھے۔

فلسطینی صدر محمود عباس، پپاکستانی وفود کا استقبال کر رہے ہیں، تصویر، پنجاب حکومت کے مشیر اطلاعات، ابوبکر عمر
تبصرے
Loading...