ہمارے پاس تیل کے کنویں ہیں نا گیس کے ذخائر لیکن ہم ایسے ممالک سے زیادہ امیر اور آزاد ہیں، ایردوان

0 1,496

ترک صدر اور آق پارٹی کے چیئرمین رجب طیب ایردوان نے استنبول میں ایک افطار پارٹی سے خطاب کرتے ہوئے لوگوں سے کہا کہ ہر ایک 24 جون کو ووٹ ڈالنے کے لیے نکلے اور اپنی رائے کا اظہار کرے۔ انہوں نے کہا، "ہمارے سامنے ابھی جمہوریت اور ترقی کی طویل سفر پڑا ہے۔ کچھ ممالک کے طرح، ہمارے پاس نہ ہی تیل کا کنویں ہیں اور نہ ہی قدرتی گیس کے ذخائر۔ تاہم، ہم ان سے زیادہ امیر اور آزاد ہیں۔ چونکہ ہمارے پاس دنیا کے سب سے زیادہ طاقتور ہتھیار ہیں، جیسا کہ جمہوریت، آزاد شفاف انتخابات اور مقتدر قومی رائے”۔

افطار کا اہتمام استنبول کے مشرقی اور جنوب مشرقی خطے کے پلیٹ فارم فار سویلین ول کے زیر اہتمام کیا گیا۔ افطار کے بعد ترک صدر نے مرکزِ آفندی شہر لائبریری کا دورہ کیا اور شہر کی تحصیل زیتون برنو میں شہریوں سے خطاب کیا۔

آسٹرین چانسلر کے اقدامات دنیا کو ایک بحران کی طرف لے جا سکتے ہیں

آسٹریا میں حال ہی میں مساجد بند کرنے اور امام مساجد کو ڈی پورٹ کرنے پر بات کرتے ہوئے ترک صدر ایردوان نے زور دیا کہ آسٹرین چانسلر کی جانب سے اٹھائے جانے والے یہ اقدامات دنیا کو ایک بحران کی طرف دھکیل سکتے ہیں جس میں صلیب اور چاند آمنے سامنے ہوں گے۔

صدر ایردوان نے کہا، "ورنہ یہ معاملے کسی دوسرے طریقے سے بھی حل کئے جا سکتے تھے۔ وہ کہتے ہیں کہ وہ ہمارے اماموں کو آسٹریا سے نکال دیں گے۔ کیا آپ سوچتے ہیں کہ آپ ایسا کریں گے اور ہم ہاتھ پر ہاتھ دھرے بیٹھیں رہیں گے؟، ہم بھی اقدامات اٹھائیں گے”۔

ووٹ دینے کے لیے جائیں اور اپنی رائے کا اظہار کریں

آنے والے انتخابات پر بات کرتے ہوئے ترک صدر ایردوان نے ہر شخص کو ابھارا کہ وہ ووٹ دینے کے لیے جائے اور اپنی رائے کا اظہار کرے۔ انہوں نے کہا، "”ہمارے سامنے ابھی جمہوریت اور ترقی کی طویل سفر پڑا ہے۔ کچھ ممالک کے طرح، ہمارے پاس نہ ہی تیل کا کنویں ہیں اور نہ ہی قدرتی گیس کے ذخائر۔ تاہم، ہم ان سے زیادہ امیر اور آزاد ہیں۔ چونکہ ہمارے پاس دنیا کے سب سے زیادہ طاقتور ہتھیار ہیں، جیسا کہ جمہوریت، آزاد شفاف انتخابات اور مقتدر قومی رائے”۔

شہری لائبریری کا دورہ

افطار پارٹی کے بعد ترک صدر ایردوان نے مرکز آفندی شہر لائبریری کا دورہ کیا۔ دورے کے دوران وزیر خاندانی و سماجی امور فاطمہ بتول سیان کایا، استنبول میٹروپولیٹن میئر میولوت اویسال، آق پارٹی استنبول کے سربراہ بیرام سانوجک اور پارلیمانی امیدواران ان کے ہمراہ تھے۔

صدر ایردوان نے لائبریری میں نوجوانوں سے گپ شپ کی اور بعد میں لائبریری کے باہر جمع ہونے والے شہریوں سے مختصر خطاب کیا۔ انہوں نے مطالعہ کی اہمیت پر توجہ دینے کو کہا۔

تبصرے
Loading...