مظلوم و مقہور طبقے کے ساتھ کھڑے رہیں گے، چاہے وہ دنیا کے کسی بھی کونے میں ہوں، صدر ایردوان

0 344

انسانی حقوق کے عالمی دن پر گفتگو کرتے ہوئے صدر رجب طیب ایردوان نے کہا ہے کہ "ہم بھرپور ثابت قدمی کے ساتھ مظلوم و مقہور طبقے کے افراد کے ساتھ کھڑے رہیں گے، چاہے وہ دنیا کے کسی بھی کونے میں ہوں۔ ہم نے شام سے لے کر فلسطین اور صومالیہ سے لے کر اراکان تک ہر جگہ ایک باوقار رویّہ اپنا کر انسانیت کی اعلیٰ مثال قائم کی ہے۔”

صدر رجب طیب ایردوان نے 10 دسمبر کو حقوقِ انسانی کے عالمی دن پر گفتگو کی۔

اقوام متحدہ کی جانب انسانی حقوق کے آفاقی اعلان کے 71 سال مکمل ہونے پر 10 دسمبر کو انسانی حقوق کا عالمی دن منایا جاتا ہے۔ اس موقع پر صدر ایردوان نے کہا ہے کہ بنی نوع انسان اپنے وجود کی بدولت فطرتاً کچھ حقوق رکھتے ہیں اور ” زندہ رہنے کے حق سے شروع ہونے والے اور ہر شعبہ زندگی کا احاطہ کرنے والے ان حقوق کی خلاف ورزی بنی نوع انسان پر بدترین ظلم شمار ہوتی ہے۔”

"مغرب کی تاریخ انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں سے بھری پڑی ہے”

"امریکا سے یورپ تک آج کے مغرب کی تاریخ انسانی حقوق کی سنگین ترین خلاف ورزیوں سے بھری پڑی ہے،” صدر نے گفتگو جاری رکھتے ہوئے کہا کہ "نسل کشی سے لے کر نو آبادیاتی مقبوضات تک، ہر ہر شرمناک داغ اُن کے دامن پر ہے جو ہماری دہشت گردی کے خلاف قانونی جنگ کی مخالفت کر رہے ہیں۔ ہم اپنے دامن پر نہ آج ایسا کوئی داغ رکھتے ہیں اور نہ ہی ہمارا ماضی ایسا رہا ہے۔ ہم بھرپور ثابت قدمی کے ساتھ مظلوم و مقہور طبقے کے افراد کے ساتھ کھڑے رہیں گے، چاہے وہ دنیا کے کسی بھی کونے میں ہوں۔ ہم نے شام سے لے کر فلسطین اور صومالیہ سے لے کر اراکان تک ہر جگہ ایک باوقار رویّہ اپنا کر انسانیت کی اعلیٰ مثال قائم کی ہے۔”

تبصرے
Loading...