دہشت گردی کے خلاف جنگ پورے عزم کے ساتھ جاری رکھیں گے، صدر ایردوان

0 469

استنبول میں نمازِ جمعہ کے بعد صحافیوں کے سوالوں کے جوابات دیتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف ترکی کی جنگ پورے عزم کے ساتھ جاری رہے گی اور "میرا ماننا ہے کہ بالآخر جمہوریہ ترکی اپنی فوج، پولیس، سپاہیوں اور سکیورٹی دستوں کے ساتھ فتح یاب ہوگا۔”

صدر رجب طیب ایردوان نے استنبول میں بزمِ عالم سلطان مسجد میں نمازِ جمعہ ادا کرنے کے بعد صحافیوں کے سوالوں کے جوابات دیے۔

دیار بکر کے ضلع قلب میں دہشت گرد حملے کے بارے میں ایک سوال پر صدر ایردوان نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف ترکی کی جنگ پورے عزم کے ساتھ جاری رہے گی اور "میرا ماننا ہے کہ بالآخر جمہوریہ ترکی اپنی فوج، پولیس، سپاہیوں اور سکیورٹی دستوں کے ساتھ فتح یاب ہوگا۔”

ترکی-روس-ایران سہ فریقی اجلاس

اگلے سوموار کو انقرہ میں طے شدہ ترکی-روس-ایران سہ فریقی اجلاس کے حوالے سے ایک سوال پر صدر ایردوان نے کہا کہ ادلب میں ہونے والی تازہ پیشرفت کے بارے میں، جس میں مشاہداتی چوکیوں اور وہاں کی دہشت گرد تنظیموں کے خلاف کارروائی شامل ہیں، اس اجلاس کے دوران بات کی جائے گی۔

صدر نے اس امر پر بھی زور دیا کہ PYD/YPG دہشت گرد تنظیم کے حوالے سے امریکا کا رویہ ترکی کے لیے بہت اہمیت رکھتا ہے، اور کہا کہ وہ ممکنہ طور پر اقوامِ متحدہ کی جنرل اسمبلی کے آئندہ اجلاس کے موقع پر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ سے اس موضوع پر اور مسئلے سے نمٹنے کے حوالے سے بات کریں گے۔

اپنے بچوں کو دہشت گرد تنظیم سے بچانے کے لیے دیاربکر میں ماؤں کے مظاہرے کے حوالے سے ایک سوال پر صدر ایردوان نے کہا کہ ریاست کی حیثیت سے ہم ان ماؤں کے ساتھ کھڑے ہیں اور اس عمل پر گہری نظر رکھے ہوئے ہیں۔

تبصرے
Loading...