کریمیا سمیت علاقائی سالمیت کے معاملے پر یوکرین کی حمایت کرتے رہیں گے، صدر ایرودان

0 318

یوکرین کے صدر ولادیمر زیلنسکی کے ساتھ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے صدر رجب طیب ایرودان نے کہا کہ "ایک مرتبہ پھر واضح کرتا چلوں کہ ترکی کریمیا پر غیر قانونی قبضے کو تسلیم نہیں کرتا۔ پھر دہرانا چاہوں گا کہ ہم کریمیا سمیت علاقائی سالمیت کے معاملے پر یوکرین کی حمایت کرتے رہیں گے۔”

صدر رجب طیب ایردوان اور صدر ولادیمر زیلنسکی نے باہمی ملاقات کے بعد کیف میں مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کیا۔

"ہم ایک مضبوط اور جدید یوکرین کے وژن کی حمایت کرتے ہیں”

صدر زیلنسکی کی زیرِ قیادت یوکرین میں جاری اصلاحات کو سراہتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ "میرے عزیز دوست ہم ایک مضبوط اور جدید یوکرین کا وژن رکھتے ہیں اور اس کی تائید کرتے ہیں۔ ایک مرتبہ پھر واضح کرتا چلوں کہ ترکی کریمیا پر غیر قانونی قبضے کو تسلیم نہیں کرتا۔ پھر دہرانا چاہوں گا کہ ہم کریمیا سمیت یوکرین کی علاقائی سالمیت پر اپنی حمایت جاری رکھیں گے۔ ہمیں امید ہے کہ یوکرین کے مشرقی علاقوں کی صورت حال پُرامن اور سفارتی ذرائع سے، عالمی قوانین اور یوکرین کی علاقائی سالمیت کی بنیاد پر جلد از جلد حل ہوجائے گی۔”

خطے میں انسانی بحران کے خاتمے کے لیے ترکی کی کوششوں پر صدر ایردوان نے کہا کہ ترکی خطے میں امن و استحکام اور یوکرین کے عوام کی فلاح و بہبود کے لیے جو ممکن ہوگا، کرتا رہے گا۔

"ہم 2023ء تک باہمی تجارت کو 10 ارب ڈالرز تک لے جائیں گے”

یوکرینی ہم منصب کے ساتھ ملاقات سے پہلے پریس کانفرنس میں صدر ایردوان نے کہا کہ انہوں نے سیاست، معیشت، تجارت، سیاحت، عسکری و ثقافتی شعبوں میں سیر حاصل گفتگو کی۔

صدر ایردوان نے کہا کہ "رواں سال کے اختتام تک دونوں ممالک نے آزاد تجارت کے معاہدے پر مذاکرات کو حتمی صورت دینے کا فیصلہ کیا ہے جو کُل ملا کر 120 ملین کی آبادی رکھتے ہیں۔ میرا ماننا ہے کہ اس معاہدے سے دستخط سے ہم دو طرفہ تجارت کو 5 ارب ڈالرز سے 2023ء تک 10 ارب ڈالرز تک لے جائیں گے۔ اسی طرح تجارتی و اقتصادی تعاون کمیشن مارچ میں اگلے اجلاس کے لیے تیار ہے۔”

سیاحت کے شعبے میں باہمی تعاون کو سراہتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ "ہم نے پہلے دونوں ملکوں کے درمیان ویزے کی پابندی ختم کی۔ پھر ہم نے شناختی کارڈ کے ساتھ سفر کرنے کی آزادی بھی دی۔ نتیجتاً 2019ء میں 15 لاکھ سے زیادہ یوکرینی شہری ترکی آئے اور 2 لاکھ 17 ہزار ترک شہری یوکرین گئے۔”

دفاعی صنعت میں دونوں ممالک کے مابین بڑھتے ہوئے تعاون کی طرف توجہ دلاتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ”22 و 23 جنوری 2020ء کو کیف میں ڈیفنس انڈسٹری کوآپریشن کا ساتواں اجلاس منعقد ہوا۔ ہم نے مشترکہ پیداوار اور تیسرے ممالک کو برآمدات کے ذریعے دفاعی صنعت میں اپنے تعاون کو بہتر بنایا ہے۔”

تبصرے
Loading...