ہم اپنی آدھی لیتھیئم کی طلب اپنے پلانٹ سے پوری کریں گے، صدر ایردوان

0 148

ایتی معدن لیتھیئم کاربونیٹ پروڈکشن پلانٹ کی افتتاحی تقریب سے بذریعہ وڈیو کانفرنس خطاب کرتے ہوئے صدر رجب طیب ایردوان نے گزشتہ تین سالوں کے دوران بورون کی پیداوار میں نکلنے والے مائع فضلے میں لیتھیئم کی ری سائیکلنگ کے لیے کی گئی تحقیق اور پیشرفت کی جانب توجہ دلائی اور کہا کہ "لیتھیئم کاربونیٹ اور مارکیٹ ایبل بورون مصنوعات فضلوں میں بورون اور لیتھیئم کا استعمال کرکے بنائی جاتی ہیں۔ ہمیں امید ہے کہ ہم اس پلانٹ کے ایک مرتبہ پوری گنجائش پر کام کرنے کے بعد اپنی موجودہ نصف لیتھیئم طلب خود پوری کر لیں گے۔”

صدر رجب طیب ایردوان نے ایتی معدن لیتھیئم کاربونیٹ پروڈکشن پلانٹ کی افتتاحی تقریب سے بذریعہ وڈیو کانفرنس خطاب کیا۔

اس امید کا اظہار کرتے ہوئے کہ یہ پلانٹ زبردست نتائج دے گا، صدر ایردوان نے کہا کہ ترکی جدید کرونا وائرس کے خلاف اپنی پرعزم جنگ لڑتے ہوئے سرمایہ کاری، پیداوار اور تجارت کو کسی طرح نظر انداز نہیں کرتا۔

"بحیرۂ اسود میں ملنے والے قدرتی گیس کے ذخائر ہمارے ملک کے لیے اہم ترین موقع ہیں”

2020ء میں خاص طور پر توانائی کے شعبے میں ملنے والی اچھی خبروں کی جانب توجہ دلاتے ہوئے صدر ایردوان نے کہا کہ بحیرۂ اسود میں ترکی نے 9 ڈرلنگز کی تھیں، "بحیرۂ اسود میں دریافت ہونے والے 405 ارب مکعب میٹر قدرتی گیس کے ذخائر ہمارے ملک کے لیے اہم ترین موقع ہیں۔ اس دریافت نے ہمارے ملک کی حقیقی صلاحیتیں ظاہر کی ہیں، جو کہ توانائی کے وسائل کے درمیان میں موجود ہے۔ ان دریافتوں کے ساتھ ہمارا ہدف قدرتی گیس میں اپنے ملک کے دوسرے ملکوں پر انحصار کو کم کرنا ہے، جن کے بارے میں امید ہے کہ یہ مزید ہوتی رہیں گی۔”

لیتھیئم کاربونیٹ اور مارکیٹ کیے جانے کے قابل بورون مصنوعات فضلے میں بورون اور لیتھیئم کے استعمال سے تیار کی جاتی ہیں”

اس امر پر زور دیتے ہوئے کہ یہ نہ صرف ترکی کے ہائیڈروکاربن وسائل کے لیے اہمیت رکھتے ہیں بلکہ دیگر قدرتی اور زیر زمین وسائل کے لیے بھی، خاص طور پر بورون کے لیے، صدر ایردوان نے گزشتہ تین سالوں کے دوران بورون کی پیداوار میں نکلنے والے مائع فضلے میں لیتھیئم کی ری سائیکلنگ کے لیے کی گئی تحقیق اور پیشرفت کی جانب توجہ دلائی اور کہا کہ "لیتھیئم کاربونیٹ اور مارکیٹ ایبل بورون مصنوعات فضلوں میں بورون اور لیتھیئم کا استعمال کرکے بنائی جاتی ہیں۔ ہمیں امید ہے کہ ہم اس پلانٹ کے ایک مرتبہ پوری گنجائش پر کام کرنے کے بعد اپنی موجودہ نصف لیتھیئم طلب خود پوری کر لیں گے، کہ جو اس وقت ہم بیرونِ ملک سے درآمد کرتے ہیں۔ مقامی لیتھیئم پیداوار ان مصنوعات کو مقامی طور پر تیار کرنے کی شرح بھی بڑھائے گی کہ جن کو ہائی ٹیکنالوجی کی ضرورت ہوتی ہے۔”

تبصرے
Loading...