‏21 ویں صدی کی تہذیبیں پلاسٹک کے سمندر اور کوڑے پہاڑ چھوڑ جائیں گی؟ خاتونِ اوّل

0 816

"From Waste to Art Project” کی ترویج کے لیے منعقدہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے خاتونِ اول امینہ ایردوان نے دنیا میں پلاسٹک کی خطرناک حد تک بڑھتی سطح کی جانب توجہ دلائی اور زور دیا کہ 2050ء تک سمندر میں مچھلیوں سے زیادہ پلاسٹک ہوگا۔ انہوں نے مزید کہا کہ "جب ہم انسانیت کی تاریخ پر نظر ڈالتے ہیں تو دیکھتے ہیں کہ قدیم تہذیبوں نے بہت سے خوبصورت کام اپنے پیچھے چھوڑے۔ 21 ویں صدی کی تہذیبیں اپنے پیچھے جو چھوڑیں گی وہ پلاسٹک کے سمندر اور کوڑے کے پہاڑ نہیں ہونے چاہئیں۔”

خاتونِ اوّل زیرو استنبول ایئرپورٹ پر ویسٹ پروجیکٹ سے متاثر ہوکر شروع کیے گئے "From Waste to Art Project” (ARTWIST) کی ترویج کے لیے منعقدہ اجلاس سے خطاب کر رہی تھی۔

تقریر کے دوران خاتونِ اول نے کہا کہ "ہمیں اب معلوم ہے کہ جن چیزوں کو ہم کوڑاکرکٹ سمجھتے ہیں وہ درحقیقت توانائی کے وسائل ہیں جنہیں اپنی زندگی ابھی مکمل کرنا ہے۔ اس لیے اہم بات یہ ہے کہ انہیں مختلف زاویے سے دیکھا جائے۔ اس وقت آرٹ ہمارے لیے ایک اہم دروازہ کھولتا ہے۔”

دنیا میں پلاسٹک کی خطرناک سطح کی جانب توجہ دلاتے ہوئے خاتون اول امینہ ایردوان نے زور دیا کہ 2050ء تک سمندروں میں مچھلیوں سے زیادہ پلاسٹک ہوگا، اور مزید کہا کہ "جب ہم انسانیت کی تاریخ پر نظر ڈالتے ہیں تو دیکھتے ہیں کہ قدیم تہذیبوں نے بہت سے خوبصورت کام اپنے پیچھے چھوڑے۔ 21 ویں صدی کی تہذیبیں اپنے پیچھے جو چھوڑیں گی وہ پلاسٹک کے سمندر اور کوڑے کے پہاڑ نہیں ہونے چاہئیں۔”

تبصرے
Loading...