مولانا روم کا 746 واں عُرس، ایک دنیا ارضِ رومی میں

0 150

اپنی تعلیمات کی وجہ سے دنیا بھر میں معروف صاحبِ فکر صوفی مولانا جلال الدین رومی کا 746 واں عُرس شروع ہو گیا ہے۔

رومی کے وصال، جسے شبِ عروس کہتے ہیں، کو منانے کے لیے ترکی اور بیرونِ ملک سے ہزاروں زائرین ترکی کے وسطی صوبے قونیہ میں آ رہے ہیں کہ جہاں وہ 7 سے 17 دسمبر تک ہونے والی بین الاقوامی تقاریب میں شرکت کریں گے۔ یہ تقریبات رومی کی تعلیمات کو چاہنے والوں کے ایک مقام پر اکٹھا ہونے اور تاریخی مقامات کو دیکھنے کا بہترین موقع فراہم کرتی ہیں۔

تقریبات کا آغاز قندیل روشن کرکے کیا گیا۔ یہ تقریب "مرج البحرین” کہلاتی ہے کہ جو علاء الدین پہاڑی کے قریب اس مقام پر واقع مولانا درویش سماع لاج میں ہوئی کہ جہاں رومی اور شمس تبریزی کی ملاقات ہوئی تھی۔ اس میں گردش کرتے درویش بھی تھے اور گلبانگ دعائیں بھی۔ اسی دن بنبیر گن (ایک ہزار ایک دن) نمائش کے افتتاح کے بعد 13 واں بین الاقوامی فوٹوگرافی مقابلہ ہوا۔ افتتاحی تقریب کے موقع پر ترک اور انگریزی زبانوں میں مثنوی کے کورسز بھی کروائے گئے جبکہ شہر کے مرکز اور اضلاع میں متعدد تقریبات ہوئیں۔ مولانا کلچرل سینٹر نمائشی ہال میں مختلف افراد، اداروں اور انجمنوں کی نمائشیں بھی ہوئی۔ ان نمائشوں میں 17 دسمبر تک شرکت کی جا سکتی ہے۔

ترک اور انگریزی زبان میں مثنوی کے اسباق، 7 کانفرنسیں، دو بین الاقوامی سمپوزیم، 15 صوفی محافلِ موسیقی اور 15 سماع تقریبات سمیت 24 موضوعات پر کُل 1,118 پروگرامات منعقد ہوں گے۔ ثقافت و سیاحت کے صوبائی ڈائریکٹر عبد الستار یرار نے کہا کہ ان تقریبات میں مقامی و غیر ملکی سیاحوں کی بڑی تعداد شریک ہوگی۔ اس موقع پر بچوں کو مولانا کی زندگی کے بارے میں تھیٹر اور کارٹون بھی دکھائے جائیں گے۔ یہ تقریبات تین سال سے منعقد ہو رہی ہیں اور لوگوں کی بہت توجہ حاصل کر رہی ہیں۔ ہم جامعہ اور شہر کے مختلف مقامات پر 12 نمائشیں بھی رکھیں گے۔ سماع کی تقریبات میں 35,000 افراد کی شرکت متوقع ہے۔ 17 دسمبر کو ہونے والے پروگراموں میں 27 ملکوں کے سفیر بھی شرکت کریں گے۔

تبصرے
Loading...