دنیا کے بلند قامت مرد کی بلند قامت ترک لڑکی کو ٹیم اپ کی آفر

0 1,316

دنیا کے سب سے بلند قامت مرد، ترکی کے جنوب مشرقی صوبے ماردین سے تعلق رکھنے والے ایک ترک، نے دنیا کی سب سے قد آور خاتون، بحیرہ اسود کے صوبے کارابک سے تعلق رکھنے والی ایک اور ترک کو پیشکش کی ہے کہ وہ ترکی کو عالمی سطح پر فروغ دینے کے لیے دنیا بھر کی تنظیموں کے ساتھ مل کر کام کریں۔

40 سالہ سلطان کوسن نے 25 سالہ رومیسا گیلگی کے ساتھ ٹیم اپ کے حوالے سے میڈیا کو بتایا کہ، "مجھے امید ہے کہ ہم مل کر ترکی کے لیے اچھی چیزیں حاصل کر سکتے ہیں۔”

ماردین کے دیہی محلے میں رہنے والے کوسن کو گزشتہ 13 سالوں سے 2 میٹر اور 51 سینٹی میٹر کی اونچائی کے ساتھ "دنیا کا سب سے بلند قامت مرد” قرار دیا گیا ہے۔ جبکہ گیلگی نے 2021ء میں 2 میٹر اور 15 سینٹی میٹر کی اونچائی کے ساتھ دنیا کی سب سے بلند قامت خاتون کے طور پر گنیز ورلڈ ریکارڈ میں رجسٹر کروایا ہے۔

کوسن نے کہا، "میں نے سب کی طرح خواب دیکھے تھے۔ میں چاہتا تھا کہ لوگ مجھے دیکھیں اور پھر ‘دنیا کا سب سے بلند قامت مرد’ کہیں۔ میں نے سب کچھ حاصل کر لیا، اب میں اپنے ملک کے لیے کچھ کرنا چاہتا ہوں۔”

گنیز سے حاصل کردہ اس اعزاز کی وجہ سے، کوسن نے کہا کہ اس نے دنیا کے تقریباً 127 ممالک کا سفر کیا ہے، ترکی کو فروغ دینے کے لیے سینکڑوں تقریبات میں شرکت کی ہے۔
اب، وقت آ گیا ہے کہ "ہم ٹیم اپ کریں۔”

ارطغرل جیسے ڈراموں سے ترکی میں سیاحت کو فروغ ملے گا، نیٹ فلکس

کوسن نے مزید کہا، "ہم رومیسا کے ساتھ ملک کو فروغ دینے کے لیے تقریبات میں شرکت کر سکتے ہیں۔”

گیلگی کو گنیز ورلڈ ریکارڈ بک میں داخل ہونے پر مبارکباد دیتے ہوئے، کوسن نے زور دیا کہ ہم دونوں کو ترکی کے لیے "مل کر کام کرنا چاہیے”۔

انہوں نے مزید کہا، "میری خواہش ہے کہ رومیسا میری کال سنے اور ہم مل کر کام کرنے کے لیے مزید آگے بڑھیں۔ میری خواہش ہے کہ ہمیں مستقبل قریب کے منصوبوں میں اپنے ملک کی نمائندگی کرنے کا موقع ملے”۔

تبصرے
Loading...
%d bloggers like this: